سرگرمیوں سے جنگلاتی علاقوں میں جنگلات کے وسائل پر تنازعات کے محرک عوامل پر اہم اثرات پڑ سکتے ہیں.

پاکستان نے  +REDD کے انتظامی بندوبست کے ایک جزو کے طور پر قومی رائے اور شکایت کی بحالی کے نظام (FGRM) کو تشکیل دیا اور قائم کیا ہے. پاکستان کے FGRM مندرجہ ذیل مقاصد کی تکمیل کرسکتے ہیں:

  • بروقت اور مؤثر طریقے سے عملدرآمد کے مسائل کی شناخت اور حل کرنا: پیشترانتباہ کے نظام کے طور پر، موثر FGRM زیادہ مہنگے اور وقت ضائع کرنے والےتنازعات سے بچتے  ہوئے ممکنہ مسائل کی شناخت اور انکا تدارک کرنے میں مدد کرتے ہیں.
  • نظام کے مسائل کی شناخت کرنا: FGRM کیسوں سے ملنے والی معلومات تواتر سے ہونے والی، مسلسل بڑھتی ہوئ اور شدید شکایات کو نمایاں کرتے ہیں اور ان سے عملدرآمدی صلاحیت اور طریقہ کار سے متعلق نظام کے مسائل کی نشاندہی کرنے میں مدد ملتی ہے جن سے نبرد آزما ہونا ضروری ہے.
  • پراجیکٹ کے نتائج کو بہتر بنانا: FGRM مسائل کے بروقت حل کے ذریعے پراجیکٹ کے مقاصد کی بروقت کامیابی میں مدد دیتے ہیں.
  • پراجیکٹ کے عملے کے احتساب کو فروغ دینا: مؤثر FGRM پراجیکٹ کے عملے کو اسٹیک ہولڈرز کے سامنے زیادہ جوابدہی کو فروغ دینے میں مدد دیتےہیں جس سے پراجیکٹ کے مجموعی نظم ونسق پر مثبت اثر پرتا ہے.

 

FGRM کا مقصد بات چیت، حقائق تک پہنچنے کی مشترکہ کاوش، مذاکرات، اور مسئلہ کو حل کرنے کےعمل سے خدشات دورکرنے میں قابل رسائ، معاون، تیز اور مؤثر ثابت ہونا ہے.

FGRM اس طرح کے اسٹیک ہولڈرز کےان خدشات کے جواب کےلئے “خط اول” کے طور پر بنایاگیا ہے جو اسٹیک ہولڈرز کی فعال شرکت سے حل نہیں ہوپاتے.

اس بات پر زور دینا اہم ہے کہ FGRM کا مقصد خدشات کو دور کرنے کےرسمی اور غیر رسمی راستوں کی تکمیل ہے، نہ کہ انکی تبدیلی. FGRM کے موجودگی شہریوں یا کمیونٹی کو کسی بھی اور قومی یا مقامی فورم پر اپنے حقوق اور مفادات کی پیروی کرنے سے نہیں روکتی۔ شہریوں کو FGRM کا استعمال عدالتوں کی اہلیت، انتظامی قانون کے طریقہ کار، یا دیگر رسمی تنازعے کے حل کے طریقوں کے مقابلےمیں نہیں کرنا چاہئے۔

FGRM کی طریقہ کارمندرجہ ذیل ہے:

شکایت کی موصولی کے وقت سے لے کر تنازعہ کے حل تک 30 کاروباری دنوں کا عرصہ رکھا گیاہے. اس کے لئےایک منظم عمل وضع کیا گیا ہےجو ذیل تصویر  میں دکھائے گئے چاراقدامات پر مشتمل ہے :

i) وصولی اور اندراج،

ii) تحقیقات،

iii) حل،

iv) نگرانی.